Home / مضامین / فیروز وٹواں

فیروز وٹواں

اسدسلیم شیخ

ضلع شیخوپورہ کاقصبہ،شیخوپورہ سے فیصل آباد جانے والی سڑک پر ۵۲کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔ سکھوں کے عہد میں کہ جب یہ علاقہ گھنے جنگلات میں گِھرا ہوا تھا فیروز نامی ایک بھٹی نے اپنے نام پر ’’فیروز‘‘ چھوٹی سی بستی بسائی، جو شمال مشرق سے ننکانہ صاحب جاتے ہوئے یاتریوں کے عین راستہ اور گزرگاہ پر بنائی گئی تھی۔ انتظامی طور پر سکھ یاتریوں کی سہولت اور دربار ننکانہ صاحب کی حفاظت کے لیے راجہ رنجیت سنگھ نے بھی اس بستی کے قریب اور اس کے نام کی نسبت سے ایک کچا قلعہ تعمیر کرایا اور ایک گھڑ سوار فوجی رسالہ قلعہ دار اور اردگرد علاقہ کی نگرانی کے لیے ہمہ وقت مقرر کیا ہوا تھا۔ بعدازاں راجہ کی اجازت سے وٹو برادری کے لوگ بھی اس بستی میں آ کر آباد ہو گئے، جس سے بستی کی رونق اور آبادی میں اضافہ ہو گیا۔ وٹو قبیلے کا اُس وقت سربراہ لنگر وٹو تھا۔ان کے ساتھ کافی مال مویشی بھی تھے۔فیروز بھٹی کی اولاد نرینہ نہ تھی اوروہ لاولدمرگیاچنانچہ آہستہ آہستہ فیروز کے ساتھ لفظ’’وٹواں‘‘مشہورہو گیا۔یہاں کے وٹوراوی کی طرف پہلے شاہ کوٹ آ کرکچھ عرصہ رہے،پھرخانقاہ ڈوگراں پِھرتے پِھراتے۱۸۳۰ء میں قلعہ فیروزکے قریب فیروزبستی میں آ کر آبادہوئے تھے۔یہاں مولوی عبدالستار، مولوی حاجی عبدالوارث،میاں محمد وٹو،حاجی بشیر محمد،حاجی محمد سِپرا،حاجی حبیب اللہ، حافظ اللہ دین اورمیاں محمدولدساوانامی بزرگوں کے مزارات بھی ہیں یہاں کے ادبااورشعرا میں مولوی عبدالستار کا نام زیادہ نمایاں ہے۔ آپ صوفی شاعراورولی اللہ تھے۔ قصص المحسنین، اکرامِ محمدی، مجموعہ اشعار اور چرخہ رنگ رنگیلا آپ کی تصانیف ہیں۔آپ ۱۸۲۳ء میں کھاریانوالہ ضلع گوجرانوالہ (موجودہ ضلع شیخوپورہ) میں مروان کے گھر پیدا ہوئے تھے۔ چالیس برس کی عمر میں ہجرت کر کے فیروزوٹواں آ گئے تھے۔یہاں دینی خدمات انجام دیں اور یہیں انتقال فرمایا۔یہاں کے دیگر ادبا میں ڈاکٹر عبدالرحمن تائب وٹو، حافظ محمد یعقوب حجازی اورظفراللہ خاں صنم کے نام نمایاں ہیں۔ان میں سے ڈاکٹرعبدالرحمن تائب ۱۹۳۴ء میں فیروزوٹواں میں پیداہوئے۔(ماخذ:’’نگر نگر پنجاب:شہروں اور قصبات کا جغرافیائی،تاریخی،ثقافتی اورادبی انسائیکلوپیڈیا‘‘)

کے بارے میں ویب ڈیسک

بھی چیک

zibabwe

افراط زرکی انتہا…تین سوٹریلین ڈالر کے ایک درجن انڈے!!

ا فراط زر کی اصطلاح اس وقت استعمال کی جاتی ہے جب اشیاء کی قیمتوں …

جواب دیجئے

%d bloggers like this: